BNP News 14.04.2017
* 16 اپریل کو صبح 11 بجے کوئٹہ ڈویژنزنل کانفرنس پارٹی قائد سردار اختر جان مینگل کی زیرِ صدارت منعقد کی جائے گی- کوئٹہ ، نوشکی ، چاغی سے تعلق رکھنے والے عہدیداران اپنی شرکت کو یقینی بنائیں۔
* بلوچوں کے ہر طبقہ فکر کے خلاف ناروا سلوک روا رکھا جا رہا ہے- وومین یونیورسٹی اور آئی ٹی یونیورسٹی سمیت دیگر جامعات میں بلوچ دشمنی پر مبنی اقدامات قابل مذمت ہیں-

 

 
کوئٹہ (پ ر) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی اعلامیہ کے مطابق کل 16 اپریل صبح 11 بجے کوئٹہ ڈویژنزنل کانفرنس پارٹی کی جانب سے منعقد کی جائے گی جس میں کوئٹہ ، نوشکی ، چاغی کے مرکزی کمیٹی کے اراکین ، ضلعی صدور ،ضلعی  جنرل سیکرٹریز ، تحصیل صدور ، تحصیل جنرل سیکرٹریز شرکت کریں گے کانفرنس کی صدارت پارٹی قائد سردار اختر جان مینگل کریں گے کوئٹہ ، نوشکی ، چاغی سے تعلق رکھنے والے عہدیداران اپنی شرکت کو یقینی بنائیں ۔
کوئٹہ (پ ر) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی بیان میں کہا گیا ہے کہ بلوچوں کے ہر طبقہ فکر کے خلاف ناروا سلوک روا رکھا جا رہا ہے بالخصوص وویمن یونیورسٹی ، آئی ٹی یونیورسٹی سمیت دیگر جامعات میں بلوچ دشمنی پر مبنی اقدامات قابل مذمت ہیں- گزشتہ کئی سالوں سے ان یونیورسٹیز میں نسلی و لسانی بنیادوں پر میرٹ کو پامال کر کے بھرتیوں کے عمل سے ثابت ہوتا ہے کہ منظم اور گہری سازش کے تحت ان تعلیمی اداروں میں بلوچ نوجوانوں و خواتین کو دور رکھنے کی پالیسی بنائی جا چکی ہے بڑے افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ تعلیمی انقلاب لانے کے دعویداروں نے محکمہ کو تباہ کر دیا ہے سینئر کی بجائے جونیئرز کو ترجیح دی جا رہی ہے تعلیم کا حصول معاشرے کی ترقی کا زینہ ہے حکمران تعلیم کے زیور سے عوام کو آراستہ کرنے سے قاصر ہیں مداخلت اور میرٹ کی دھجیاں اڑانے کو اپنا نصب العین بنا لیا جائے تو تب معاشروں میں علمی فروغ تقویت پانے کی بجائے زوال پذیر ہوتا ہے بیان میں کہا گیا ہے کہ دیگر محکموں میں بھی بلوچوں کو یکسر نظر انداز کرنے کا عمل جاری ہے بلوچ سرزمین کے وسائل سے چلنے والے سرکاری ادارو ں میں ہمیں ہی نظر انداز کرنا کہاں کا انصاف ہے چانسلر کی جانب سے یونیورسٹیز میں پسند و ناپسند کی پالیسی کو ترک کیا جائے حالیہ چند سالوں میں جو بھرتیاں کی گئیں ہیں ان کی مکمل تحقیقات ہونی چاہئے ۔